55

شام پر ایک بار پھر فضائی حملہ کر سکتے ہیں، امریکا

واشنگٹن: امریکا کے مشیر قومی سلامتی جان بولٹن نے بشار الاسد کی حکومت کو شام میں کیمیکل ہتھیاروں کے استعمال سے باز رہنے کے لیے ایک بار پھر فضائی حملے کی دھمکی دے دی۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی مشیر برائے قومی سلامتی جان بولٹن نے اسرائیل اور ترکی کے چار روزے دورے کا آغاز کردیا ہے جہاں وہ شام سے امریکی فوج کے انخلاء پر فریقین سے مذاکرات کریں گے۔ تل ابیب کے سفر پر صحافیوں سے طیارے میں گفتگو کرتے ہوئے جان بولٹن نے پرانے موقف کو دہراتے ہوئے کہا کہ شام میں کیمیکل ہتھیاروں کے استعمال پر سخت امریکی ردعمل میں کوئی تبدیلی نہیں آئے گی۔ مشیر امریکی سلامتی جان بولٹن نے مزید کہا کہ امریکی فوج شام میں رہتی ہے یا واپس چلی جاتی ہے، دونوں صورتوں میں اگر شام نے کیمیائی ہتھیار استعمال کیے تو امریکا شام پر تیسری بار بھی فضائی حملے سے گریز نہیں کرے گا۔ واضح رہے کہ شامی حکومت کی جانب سے کیمیکل ہتھیاروں کے استعمال پر سخت ردعمل دیتے ہوئے امریکا نے اپریل 2017 اور اپریل 2018 میں اتحادی افواج کی تنصیبات پر فضائی بمباری کی تھی۔